Skip to main content
Tag

شعیب کیانی ۔ شامِ فرہاد

شعیب کیانی ۔ شامِ فرہاد

’’سننا ہے تو پھر احمد فرہاد کو سنیئے‘‘ ایک شام’’ احمد فرہاد‘‘ کے نام 30جنوری،2020ءبروز جمعرات ایک شام ’’احمد فرہاد ‘‘کے نام منعقد ہوئی جس کا اہتمام مونتاج ایونٹس اینڈ کنسلٹنٹس نے کیا۔اس یادگار شام کے مہمان خصوصی واحد اعجاز میر، ارشد ملک ، رفاقت راضی اور سردار ثاقب نعیم تھے۔معروف سماجی کارکنان حماد بلغاری اور کاشف حسین صاحب نے خصوصی شرکت کی۔نظامت راقم الحروف نے کی۔ دراصل یہ دوستوں کی ایک نشست تھی جو احباب کی احمد فرہاد سے محبت کے باعث ایک شاندار شام کا رنگ اختیار کر گئی۔دوست احمد فرہاد کی اسلام آباد میں آمد کی خبر سن کر ملاقات کے لیے کھنچے چلے آئے اور ان کا کلام سننے کی خواہش پوری کی۔اس شام کی خاص بات وہ شاعرانہ ماحول تھا جس نے حاضرین پر ایک خاص کیفیت طاری کر دی۔ایک ایک شاعر ،ایک ایک شعر لاجواب۔عمدہ کلام سننے کو ملا۔نوجوان شعراء نے بھی اپنے فن کے جوہر دکھائے ۔اور خوب خوب داد سمیٹی۔سامعین نے حظ اٹھایا اور سب کو دل کھول کر داد دی۔ارشد ملک ، رفاقت راضی، واحد اعجاز میر اور خو د احمد فرہاد نے اپنا کلام سنا کر اس حسین شام کو ناقابلِ فرموش بنادیا۔شعراء کے علاوہ سامعین نے بھی سب کو بہت توجہ سے سنا اور بھر پور داد دی۔ جن شعرا نے کلام پیش کیا ان کے اسمائے گرامی درج ِذیل ہیں۔ شبیر احمد حمید ، نزیلہ ایمان، ہما صدیقہ ، جواد حمید، عقیل ارشد رندھاوا ، اخلاق رانا، عمار اعظم، نظامت حسین ، شعیب کیانی ، رفاقت راضی، واحد اعجاز میر، ارشد ملک اور احمد فرہاد۔ آخر میں مونتاج ایونٹس اینڈ کنسلٹنٹس اور ادبستان کے سربراہ جمیل اقبال نے تمام حاضرین کا شکریہ ادا کیا اوراس شام کو یاد گار بنانے پر مبارک باد پیش کی ۔