Skip to main content

پاکستان کا شعری سرمایہ ہمیشہ اُردو ادب کے عالمی منظر نامے پر سرفہرست رہا ہے ۔ اقبال سے فیض اور فیض سے ناصر کاظمی ، احمد فراز ، منیر نیازی اور پروین شاکر تک ہمارا ملک شعری لحاظ سے ہمیشہ زرخیز رہا ہے ۔ گزشتہ بیس برس میں بھی اردو کے عالمی شعری منظر نامے پر پاکستانی شعرا کے نقوش سب سے گہرے ہیں جن میں نظم اور غزل دونوں جہتوں میں بڑے منفرد اور مضبوط شاعر اُبھرےہیں ۔خاص طور پر گزشتہ دس برس میں پاکستان سے اٹھنے والی نئی شعری آوازوں نے دنیا بھر میں اردو شاعری سے شغف رکھنے والوں کو اپنے سحر میں لیا ہے۔ احمد فرہاد اور علی زریون بھی نئی نسل کے دو ایسے ہی معروف اور مقبول شاعر ہیں جنہیں دنیا بھر میں اردو سے محبت کرنے والے لاکھوں لوگ پسند کرتے ہیں ۔علی زریون کے ہاں تصوف اور عشق کے رنگوں کا امتزاج ہے تو احمد فرہاد رومان اور مزاحمت کے اشتراک سے نئی شعری فضا دریافت کر رہے ہیں۔اس پروگرام میں ہم کوکاسٹوڈیو اور سُرکشیتراسے شہرت پانے والے معروف گلوکار مُلازم حسین اور تیزی سے نام بنانے والے گلوکار علی کاظمی کو بھی سامنے لائے جنھوں نے شعر اور سنگیت کے امتزاج سے اس شام کو چار چاند لگائے۔ شام سخن کی نظامت کے فرائض صفدر علی نے سانجام دیے اور مہمان خصوصی تحریک آزادی کشمیر کے مرکزی رہنماء، ملک کی مشہور و معروف سیاسی و سماجی شخصیت اور انسانی حقوق کے علمبردار الطاف احمد بٹ تھے۔

پیشکش: ادبستان
منتظم: مونٹاج ایونٹس اینڈ کنسلٹینٹس
سپونسرز:
المکہ سٹی
چنار بلڈرز
برینڈز اَپ سلوشنز

Leave a Reply